آزادی کی قیمت، دفاع - طلحہ زبیر بن ضیا

مجھے ان سے ملے دوسرا دن تھا۔ ہر وقت مسکراہٹ چہرے کو خوبصورت بنائے رکھتی اور ایک عجیب سی کشش لیے آنکھیں، جو انسان کو اندر تک محسوس ہوتیں۔ چہرے پر زندگی سے لڑنے کے آثار، جب بولتے تو خود اعتمادی جھلکتی۔ پہلی ملاقات میں ہی مجھے اس شخصیت کے پیچھے ایک درد نظر آیا۔ میں اپنی عادات کے خلاف ان کی شخصیت کو...