ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

دل میں جملوں کی صورت مجسم ہونے والے خیالات کو قرطاس پر اتارنا اگر شاعری ہے تو رابعہ خرم شاعرہ ہیں، اگر زندگی میں رنگ بھرنا آرٹ ہے تو آرٹسٹ ہیں۔ سلسلہ روزگار مسیحائی ہے. ڈاکٹر ہونے کے باوجود فطرت کا مشاہدہ تیز ہے، قلم شعر و نثر سے پورا پورا انصاف کرتا ہے-

فیس بک پروفائل ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

پوتا چاہیے تو – ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

اس پر ہمیشہ میرا دل کڑھتا ہے کہ بچہ پیدا کرے تو زچگی کا درد سہے عورت، بچے پیدا کرنے سے بچنا ہے تو فیملی پلاننگ کے لیے گنی پگ بنے عورت، حمل ٹھہر گیا، ضائع کروانے کے لیے تکلیف اٹھائے تو بھی عورت، ابارشن کروا کر خدا کی بھی مجرم قانون کی بھی مجرم مزید پڑھیں