محمد زاہد صدیق مغل

محمد زاہد صدیق مغل نسٹ یونیورسٹی کے شعبہ اکنامکس میں تدریس کے فرائض سر انجام دیتے ہیں۔ قائد اعظم یونیورسٹی اسلام آباد سے معاشیات میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔ ملکی و غیر ملکی جرائد و رسائل میں تسلسل کے ساتھ تحقیقی آراء پیش کرتے رہتے ہیں۔ ان کی تحقیق کے خصوصی موضوعات میں معاشیات، اسلامی فنانس وبینکنگ اور جدیدیت سے برآمد ہونے والے فکری مباحث شامل ہیں۔

فیس بک پروفائل ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

خلافت کا معنی و ناگزیریت؛ سوال درست کیجیے – ڈاکٹر محمد زاہد صدیق مغل

ایک مخصوص طبقے کی طرف سے بار بار یہ سوال دہرایا جاتا ہے کہ ’’کیا خلافت کا قیام دین کا مطالبہ ہے؟ بتائیے کس نص میں اس کا ذکر ہے؟‘‘ مناسب معلوم ہوتا ہے کہ اس استدلال کی بنیادی غلطی کو واضح کردیا جائے جو ہمارے یہاں درحقیقت ہندوستان سے امپورٹ کیا گیا ہے۔ اللہ مزید پڑھیں

بیسویں صدی کا روایتی بیانیہ کیا تھا؟ محمد زاہد صدیق مغل
اباحیت پسندی کا بیانیہ – محمد زاہد صدیق مغل
کفر کا اختیار ’حق‘ نہیں’مہلت و مراعت‘ ہے – محمد زاہد صدیق مغل
فرد سے معاشرہ یا معاشرے سے فرد؟ ڈاکٹر محمد زاہد صدیق مغل
تجدد اور الحاد کا باہمی تعلق – ڈاکٹر محمد زاہد صدیق مغل
ذاتی زندگی میں عدم مداخلت کے لبرل اصول کا تجزیہ – ڈاکٹر محمد زاہد صدیق مغل
مسئلہ تقدیر کا معرکۃ الاراء سوال – محمد زاہد صدیق مغل
ہائیر ایجوکیشن کے مسائل – محمد زاہد صدیق مغل
حجاب اور 5 نمبر – محمد زاہد صدیق مغل
کوٹہ سسٹم، استحصال اور پنجاب – محمد زاہد صدیق مغل
پاکستان میں وسائل کی تقسیم کے فیصلے – محمد زاہد صدیق مغل
صوبائی تعصب کی سٹیریو ٹائیپنگ – محمد زاہد صدیق مغل
پردہ اور ڈیٹ: اختلاف حقائق کا نہیں اقدار کا ہے – محمد زاہد صدیق مغل
مساوات کے عملی مسائل – محمد زاہد صدیق مغل
انسانوں کے بیچ جانوروں کی آبادی؛ مذہبی ترجیحات پر ہی اعتراض کیوں؟ محمد زاہد صدیق مغل