مستقل مزاجی کامیابی کی ضمانت - محمد عنصر عثمانی

’’میں جو کام کرتا ہوں دو چار آٹھ مہینے بعد وہ کام ختم ہو جاتا ہے، چائے کا اسٹال لگایا ، پانچ مہینے بعد بند کرناپڑا، بریانی کا ٹھیلا لگایا ، آٹھ ماہ بعد خسارہ برداشت سے باہر ہوگیا ، مقروض ہو کر ٹھیلا بیچ کرگھر بیٹھنا پڑا۔‘‘نوجوان ہمارے سامنے اداس بیٹھا تھا اور اس کے چہرے پر کئی رنگ آجارہے تھے،فکر...