محبت سے عشق تک - ڈاکٹر فرحت حبیب

محبت جب ابراہیم کو ہوئ تو کسی نے کیا خوب کہا، بےخطر کود پڑا آتش نمرود میں عشق کہ عقل ہے محو تماشا ئے لب بام ابھی بی بی حاجرہ کی ممتا نے جب صفا مروہ کے چکر لگائے تو اسماعیل کی ایڑیوں سے آب زمزم پھوٹ پڑا. عاشقان رسول کا عشق کیا کہ رہا ہے، کی محمد سے وفا تو نے تو ہم تیرے ہیں یہ جہاں چیز ہے کیا لوح و...

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */