ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ڈاکٹر محمد مشتاق احمد بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی، اسلام آباد کے شعبۂ قانون کے چیئرمین ہیں ۔ ایل ایل ایم کا مقالہ بین الاقوامی قانون میں جنگِ آزادی کے جواز پر، اور پی ایچ ڈی کا مقالہ پاکستانی فوجداری قانون کے بعض پیچیدہ مسائل اسلامی قانون کی روشنی میں حل کرنے کے موضوع پر لکھا۔ افراد کے بجائے قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اور جبر کے بجائے علم کے ذریعے تبدیلی کے قائل ہیں۔
فیس بک پروفائل
ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

جبری گمشدگی؛ قانون و اخلاقیات، چند اہم سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

کئی دنوں سے اس موضوع پر لکھنے کا ارادہ تھا لیکن مصروفیات کی وجہ سے وقت نہیں ملا۔ اس دوران میں کئی اہل علم و قلم نے اس موضوع کے مختلف پہلوؤں پر اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ کسی نے حقوقِ انسانی کی دہائی دی ہے، تو کوئی دہائی دینے والوں کے ”دوغلے پن“ مزید پڑھیں

میں برات کا اعلان کرتا ہوں! – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
عوام کے لیے سیکیورٹی پلان – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ڈاکٹر عبد السلام صاحب کا مسئلہ کیوں مختلف ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
”قادیانی“ آرمی چیف اور لبرلزم کا پائے چوبیں – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
قطری شہزادے کا خط، چند مزید سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
قطری شہزادے کا تحفہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دہشت گردی کا جرم اور اسلامی قانون – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
صوبائیت کی لعنت اور ہمارے اہل علم – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دیت، عاقلہ اور ٹریفک حادثات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
پاناما لیکس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، مقامِ شکر تو یقیناً ہے – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دنیا بلیک اینڈ وہائٹ نہیں ہے – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
پرویز رشید صاحب کی رخصتی – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اسلام آباد ہائیکورٹ کا عجیب و غریب فیصلہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اگر دھرنا کامیاب ہوجائے! ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دل کا حال کیسے معلوم ہوتا ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

Pin It on Pinterest