ن لیگ اور پیپلزپارٹی کا ”ترقیاتی“ ماڈل - محمد عامر خاکوانی

ہمارے ہاں عملی طور پر دو معاشی ماڈل یا تصورات موجود ہیں۔ پہلا کاروباری افراد کی حوصلہ افزائی، ان کی سرپرستی اور ہر قیمت پر معاشی سرگرمیاں بڑھانے کا ماڈل ہے۔ اس تصور پر یقین رکھنے والوں کے خیال میں کاروباری سرگرمیاں جاری رہنی چاہییں، ملکی معیشت چلتی رہے، میگا پراجیکٹ لگتے رہیں، ا س سے روزگار ملے گا،...