میں بے زبان ہوں - سارہ عثمان

میں آج بھی بولنا جانتی ہوں، پر زبان کی قیمت اپنے رشتے کی دوری کی صورت چکانی پڑی۔ حیوانی جسم مجھے بھی حاصل ہے، نفس کا شور میرے اندر بھی جاگتا ہے لیکن میری زبان کے شور نے مجھے میرے رشتے سے دور کر دیا۔ خوش قسمت لگنے لگے یہ آسمان پہ اڑتے پرندے، یہ زمین پہ چلتے حیوان جو اپنے جوڑے کے ساتھ بغیر زبان کے...