آئینہ :معاشرے کے ایک اہم کردارکا چہرہ دکھاتی کہانی - محمد عنصر عثمانی

’’تمہیں کتنی مرتبہ کہا ہے، مجھ سے دُور کھڑے ہوا کرو۔ تم سے بہت بدبو آتی ہے۔اور ہاں! تم تو مہینے کی د س تاریخ کو پیسے لیتے ہو ، ابھی کس لیے چاہئیں؟ آج تو چار تاریخ ہے ۔ بھاگ جائو یہاں سے ، کتنی گندی بو پھیلا دی تم نے یہاں۔‘‘ رُندھی ہوئی آوازسے وہ بس ’ جی‘ کہہ کر رہ گیا۔ اس بڑے سے گھر کا مالک اپنی...