حافظ یوسف سراجادب اور دین دلچسپی کے میدان ہیں۔ کیرئیر کا آغاز ایک اشاعتی ادارے میں کتب کی ایڈیٹنگ سے کیا۔ ایک ہفت روزہ اخبار کے ایڈیٹوریل ایڈیٹر رہے۔ پیغام ٹی وی کے ریسرچ ہیڈ ہیں۔ روزنامہ ’نئی بات ‘اورروزنامہ ’پاکستان‘ میں کالم لکھا۔ ان دنوں روزنامہ 92 نیوز میں مستقل کالم لکھ رہے ہیں۔ دلیل کےاولین لکھاریوں میں سے ہیں۔

ہجرت کے پندرہ سو سال بعد - یوسف سراج

کون مانے؟ کسے یقیں آئے؟ وہ چار قدم تاریخِ انسانی کو بدلنے کے لیے خدا کی سنگلاخ دھرتی پر اٹھے وہ چار قدم جبر کو توڑتے، گرد ِراہ کو کاٹتے، عزم سے اٹھتے اور یقین سے زمیں پر آ پڑتے سوئے منزل رواں وہ چار قدم ان چار قدموں پر جو مبارک دھڑ اور مقدس سر تھے۔ بشریت کا وہ اعجاز دو بشر تھے۔ بے دری کی حالت، بے...