حافظ یوسف سراجادب اور دین دلچسپی کے میدان ہیں۔ کیرئیر کا آغاز ایک اشاعتی ادارے میں کتب کی ایڈیٹنگ سے کیا۔ ایک ہفت روزہ اخبار کے ایڈیٹوریل ایڈیٹر رہے۔ پیغام ٹی وی کے ریسرچ ہیڈ ہیں۔ روزنامہ ’نئی بات ‘اورروزنامہ ’پاکستان‘ میں کالم لکھا۔ ان دنوں روزنامہ 92 نیوز میں مستقل کالم لکھ رہے ہیں۔ دلیل کےاولین لکھاریوں میں سے ہیں۔

تم سب کرسکتے ہو، یہ مگر نہیں، کبھی نہیں - حافظ یوسف سراج

میں گنگ سنتا جاتا تھا اور شرم سے زمیں میں گڑا جاتا تھا اور وہ کہتا جا رہا تھا۔ تم قتل کر سکتے ہو اور تم قتل ہو سکتے ہو۔ تم دریاؤں میں کود سکتے ہو، پہاڑوں پر چڑھ سکتے ہو اور تم طوفانوں سے لڑ سکتے ہو۔ تم حج کرسکتے ہو اور لاکھوں روپے لگا کر دوسروں کو حج کروا سکتے ہو۔ تم ایک دن میں سو سو نوافل پڑھ...