سنو! مجھے جینا آتا ہے - عبد الباسط بلوچ

آگ وہ لگی کہ میرا گھر خاکستر ہوگیا،میرا پورا جسم لہو لہو ہو گیا،میری زندگی سے چین چھن گیا، میرے دل سے امن کی امید محو ہو گئی، میرا احساس بندگی ختم ہو گیا۔درد دل بھی اب نہ ہونے کے برابر ہے۔مذمت میرا روز کا کام بن گیا۔خون میں لتھڑے لوگ،بوٹیوں سے جوڑ کر بنتے لاشے،گٹھڑیوں کی شکل میں رکھے جنازے،ایمولینس...