مرضی بھی کوئی مرض ہو گیا - شیخ خالد زاہد

ایسا نہیں کہ اسلام سے قبل عربوں کا کوئی ضابطہ اخلاق یا قانون نہیں تھا لیکن وہ ضابطہ اخلاق وہ قانون قبیلے کے سردار کی مرضی کیمطابق تھا، جو اسے اچھا لگا یا اسکے قریبی ساتھیوں کو اچھا لگا اسے ضابطہ اخلاق یا قانون کا حصہ بنادیا گیا، اس طرح سے جتنے قبیلے اتنے ہی قوانین اور قوانین بھی وہ جو انسانیت کی...