ہر شاخ پہ الو بیٹھا ہے -اسماء طارق

کئی دنوں سے کوشش کر رہی تھی کہ کوئی نیا کالم لکھا جائے مگر چراغوں میں روشنی نہ تھی۔ کہاں سے شروع کیا جائے، ملکی حالات پر نظر دوڑائیں تو جی چاہتا ہے کہ کان میں انگلیاں دے کر کسی کمرے میں خود کو بند کر دیا جائے جہاں تک کوئی آواز نہ پہنچ سکے ۔ کاش قدرت کا کوئی ایسا نظام ہوتا ہے کہ کچھ دیر کےلیے مر...