جمیل اصغر جامی

جمیل اصغرجامی شعبہ تدریس سے وابستہ ہیں اور انگریزی ادب و لسانیات کے مضامین پڑھاتے ہیں۔ انگریزی، فلسفہ اور سیاسیات میں ماسٹر جبکہ لسانیات میں پی ایچ ڈی ہیں۔ اس کے علاوہ امریکہ سے لسانیات میں ریسرچ فیلوشپ کی ڈگری بھی رکھتے ہیں۔ مطالعہ اور تحقیق ان کا شوق ہے۔ ان کے تحقیقی مضامین مختلف جرائد میں شائع ہوتے رہتے ہیں۔

کیا دنیا مہذب ہوچکی ہے؟ جمیل اصغر جامی

تاریخ کا کوئی بھی عہد ہو، وہ بنیادی انسانی جبلتوں کا زمانی اور مکانی اظہار ہوتا ہے۔ تمدن میں بھی وحشت کی صورتیں پنہاں ہوتی ہیں اور وحشت میں بھی متمدن رویے تلاش کیے جاسکتے ہیں۔ درحقیت تمدن اور وحشت کی یہ زمانی تقسیم ہی غلط ہے۔ کسی ایک عہد کو وحشت سے منسوب کر کے دوسرے عہد کو تمغہ تہذیب سے نوازنا...