"ایک تعلق جو ادھورا رہا تھا" - راحت نسیم روحی

امی ہم آج تک کیا کرتے رہے ہیں؟ کیا ہم سراب کے پیچھے ہی دوڑتے رہے؟" سارا نے کہا تو وہ آنکھیں بند کر کے سوچنے لگی۔"زندگی کا ایک حصہ خدا کی زمین پر اس کے احسانات تلے گزارا، کیا شکر ادا کیا؟ وہ دنیاداری کے تعلق تو نبھاتی رہی، ایک اور تعلق بھی تھا۔ کیا اس کو نبھایا؟ زینب نے آنکھیں کھولیں تو لگا جیسے...