جو بھی تھا کیا تھوڑا تھا؟ - جہانزیب راضی

چلیں ہم جرمنی سے شروع کرتے ہیں۔ جنگ عظیم دوئم میں جرمنی کے 114 چھوٹے بڑے شہر صفحہ ہستی سے مٹ گئے۔ پورے ملک میں سوائے موت، سناٹے اور مایوسی کے کچھ نہیں بچا تھا۔ جرمنی اتنے بدترین حال میں آچکا تھا کہ اس نے ملک کی تعمیر و ترقی کے لیے دنیا سے قرضہ مانگا۔ 1963 میں صدر ایوب خان نے 12 کروڑ روپے جرمنی کو...