زندگی عدل میں ہے - یوسف سراج

ذرا سی دیر میں سودا طے پا گیا۔ خلیفہ نے رقم دی، گھوڑی کی لگام پکڑی اور سوار ہو کے ایڑ لگا دی۔ کچھ سفر تو شروع ہی اس لیے ہوتے ہیں کہ ناتمام رہ جائیں۔ گھوڑی راہ میں کہیں لڑ کھڑائی یا کچھ اور ہوا، شاید کسی رگ پٹھے میں کھنچاؤ آ گیا۔ بہرکیف، گھوڑی لنگڑانے لگی۔ خلیفہ نے باگیں کھینچیں اور رخ موڑ لیا۔...