آواز دوست – محمود زکی

اردو ادب کا قصہ صدیوں پر پھیلا طویل تر ہے، تاریخ عالم کا سرا اس وقت سے جا ملتا ہے جب انسان نے اس دنیا پر بسیرا کیا اور فلسفہ یونانیوں کی اختراع ہے، ان تینوں کے ساتھ علم و حکمت، غور و فکر، عبرت و نصیحت، اختصار و جامعیت سے آراستہ و پیراستہ ایک مزید پڑھیں

بلاعنوان – ضیغم اعوان

ان دونوں کا معاشقہ کافی عرصے سے چل رہا تھا ابتداء کچھ یوں ہوئی کہ سب سے پہلے کالج سے واپسی پہ ان کی نظر لڑی وہ پہلی ہی نظر میں ایک دوسرے کوبھا گئے آہستہ آہستہ فری ہوۓ ، فون پہ پیکیج لگا اور پھر گھنٹوں باتیں پھر چھپ چھپ کے پارکوں میں ملاقاتیں مزید پڑھیں

من الظلمت الی النور – عالیہ ذوالقرنین

“کاشف…. کاشف!!!! میرے بیٹے.. میرے لال! کہاں ہو تم؟ جواب دو “اس کی آواز بھی اب نقاہت اور تکلیف سے بمشکل کچھ دور تک ہی پہنچ پا رہی تھی ۔ تپتے صحرا میں وہ ننگے پاؤں بھاگ رہی تھی… حواس باختہ.. صدیوں کی تھکن چہرے پر لئے.. اس کے چہرے سے پسینہ آبشار کی طرح مزید پڑھیں

مکافات – آصف اقبال

فارم ہاؤس پہ ہو کا عالم طاری تھا۔ زاخو کی موت کوئی عام واقعہ نہیں تھا۔ بٹ صاحب کو اس بات کی اطلاع مل چکی تھی۔ اور اب چھپن سو ایکڑ پر محیط اس فارم پر پرندے بھی پر پھڑپھڑانے سے پہلے سوچ رہے تھے۔ زاخو کی رہائش گاہ کے سامنے پانی کا فلٹر پلانٹ مزید پڑھیں

درزی – حجاب امتیاز علی

رات کے پون بجے جب شبی نے مجھے کسی درزی کی دکان پر چلنے پر اصرار کیا تو میں حیران ہو کر بولی ’’مگر اس وقت؟‘‘ ’’ہاں ہاں اسی وقت روحی… عید کی مصروفیت کی وجہ سے آج کل دن کے وقت درزی نہیں ملتا۔ تم جلدی سے اپنی کار نکالو۔‘‘ شبی نے اصرار کیا۔ مزید پڑھیں

مسیحا (1) – شہاب رشید

سینڑل جیل کا دروازہ کھلا اور قاسم بوجھل قدموں سے باہر نکلا۔ نیلے رنگ کا ایک تھیلا اس کے کندھوں پر تھا۔ قدم اٹھائے نہیں اٹھتے تھے۔ پیچھے مڑ کر دیکھا، قیدیوں کی ایک بڑی تعداد اسے الوداع کہنے آئی تھی، اس نے سب کی طرف دیکھ کر ہاتھ کا اشارہ کرکے وداع کہا۔ سب مزید پڑھیں

امید کی موت – ممتاز شیریں

آم کا وہ پیڑ بہت پرانا تھا۔ اسے میرے دادا جی نے بہت محبت کے ساتھ لگایا تھا۔ یہ اُس وقت کی بات ہے جب میں پیدا بھی نہیں ہوئی تھی۔ پاکستان کو بنے کچھ ہی عرصہ ہوا تھا۔ دوسرے مسلمانوں کی طرح داداجی بھی ہندوستان سے ہجرت کر کے پاکستان آئے تھے۔ وہاں ہندوستان مزید پڑھیں

پیاس – جویریہ سعید

جب سے اس نے دوڑنا بھاگنا اور مزے مزے کی باتیں بنانا شروع کیا تھا، تب سے میں نے اس کے لیے ایک چھوٹا سا بستہ، ایک پانی کی بوتل اور ایک ننھا سا لنچ باکس خرید کر رکھ لیا تھا۔ ایک چھوٹی سی ڈبیا، جس میں قلم، ربر، رنگ اور پنسلیں تھیں اور چند مزید پڑھیں

جو حکم اللہ کا – ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

بوٹے سے قد کی وہ نازک دلہن اپنے چھ فٹ سے نکلتے قد والے شوہر کے ساتھ بہت بھلی لگتی تھی. سر پر دوپٹہ لیے، پلو کا کونا منہ میں دبائے بھاگ بھاگ کر اپنے ساس سسر کی خدمت بجا لاتی، چھوٹے دیوروں سے چھوٹے بھائیوں اور بیٹوں کی طرح پیار کرتی، سب کے دلوں مزید پڑھیں

“پھر یوں ہوا کہ” – سید مستقیم معین

رات کا آخری پهر شروع هو چکا تھا۔ مجرم کال کوٹھڑی میں تھا۔ ابھی کچھ ہی دیر پہلے بیوی سے ملاقات هوئی تھی۔ اس نے بتایا تھا که هر جگه سے رحم کی اپیل مسترد هو چکی هے۔ مجرم پر مایوسی طاری هو چکی تھی۔ اسے اپنے کیے پر ندامت تھی۔ ره ره کر اپنے مزید پڑھیں