ڈاکٹر محمد مشتاق احمدڈاکٹر محمد مشتاق احمد بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی، اسلام آباد میں شریعہ اکیڈمی کے ڈائریکٹر جنرل ہیں، اس سے قبل شعبۂ قانون کے سربراہ تھے۔ ایل ایل ایم کا مقالہ بین الاقوامی قانون میں جنگِ آزادی کے جواز پر، اور پی ایچ ڈی کا مقالہ پاکستانی فوجداری قانون کے بعض پیچیدہ مسائل اسلامی قانون کی روشنی میں حل کرنے کے موضوع پر لکھا۔ افراد کے بجائے قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اور جبر کے بجائے علم کے ذریعے تبدیلی کے قائل ہیں۔

حکومت آرمی چیف کے معاملے میں غلطیاں کیوں کر رہی ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

بہت سے دوست یہ سوال کررہے ہیں۔ یہ سوال واقعی قابلِ غور ہے اور اس لحاظ سے اور بھی قابل توجہ ہوجاتا ہے کہ سیاسی حکومتیں تو آتی جاتی ہیں، صدر، وزیر اعظم اور وزیر قانون کے دفاتر میں موجود بیوروکریٹس تو سالہا سال روٹین کا کام کرتے رہتے ہیں ۔ زیادہ سے زیادہ کسی اوپر والے افسر کا تبادلہ ہوجاتا ہے اور مرضی...