ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

ڈاکٹر محمد مشتاق احمد بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی، اسلام آباد کے شعبۂ قانون کے چیئرمین ہیں ۔ ایل ایل ایم کا مقالہ بین الاقوامی قانون میں جنگِ آزادی کے جواز پر، اور پی ایچ ڈی کا مقالہ پاکستانی فوجداری قانون کے بعض پیچیدہ مسائل اسلامی قانون کی روشنی میں حل کرنے کے موضوع پر لکھا۔ افراد کے بجائے قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اور جبر کے بجائے علم کے ذریعے تبدیلی کے قائل ہیں۔

فیس بک پروفائل ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

مصلحت اور منصوص احکام کی معطلی – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

علت اور حکمت پر بحث میں ہمارے اکثر متجددین نے جو طریق استدلال اپنایا ہے اس کی انتہا میں بالعموم مزعومہ مصالح اور حکمتوں کی بنیاد پر منصوص احکام کی معطلی اور منسوخی کا اعلان کردیا جاتا ہے۔ مقاصدی فکر کے ایک علم بردار فرماتے ہیں: ”اور جو کچھ عمر فاروق بن الخطاب نے کیا مزید پڑھیں

بین الاقوامی عدالتِ انصاف کا فیصلہ: ایک قانونی تجزیہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
مزدوروں اور غریبوں کے استحصال کا ایک اور انداز – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ٹیکس، حج اور جوابی بیانیہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
مزدور، فیکٹری حادثات اور اسلامی قانون – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
فساد، بغاوت اور رہزنی: سب کا ایک ہی حل؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
بغاوت سے توبہ کے بعد قانون کا اطلاق – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
سودی قوانین کے خلاف مقدمہ؛ علمائے کرام کیا کر رہے ہیں؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
کیا سپریم کورٹ قانون توہین رسالت تبدیل یا ختم کر سکتی ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
شراب کی حرمت و سزا، بیرسٹر ظفر اللہ کا اصل مؤقف – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
گستاخ رسول کو قتل کرنے والے شخص کا شرعی حکم – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
شراب اور بیرسٹر ظفر اللہ، اصل مسئلہ کیا ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
قومی ریاست بطور ناجائز بچہ، چند سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
حکمرانوں، عدالتی نظام کی شرعی حیثیت – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
مختلف نظام ہائے قوانین کے اصولوں میں تلفیق، چند اہم سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
خود کش حملوں کی شرعی حیثیت – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد