جمال عبداللہ عثمانجمال عبداللہ عثمان نے صحافتی زندگی کا آغاز کراچی سے کیا۔ مختلف روزناموں کے ساتھ وابستہ رہے۔ چار کتابوں کے مصنف ہیں۔ آج کل ایک نجی ٹی وی چینل کے ساتھ بطورِ پروگرام پروڈیوسر وابستہ ہیں۔

گولڑہ شریف کے ”شریف زادے“ - جمال عبداللہ عثمان

یہ گولڑہ شریف کے ”شریف زادے“ ہیں۔ میں حسنِ ظن رکھنا چاہتا ہوں، لیکن بدقسمتی سے نہیں رکھ پارہا۔ یہ ”شریف زادے“ جس مزار کے متولی ہیں، اس مزار پر سالانہ لاکھوں بے بس مائیں اور لرزیدہ ہاتھ باپ آکر حاضری دیتے ہیں۔ اس حاضری میں وہ روتے اور گڑگڑاتے ہیں۔ کس مقصد کے لیے؟ ”میری بچی کے ہاتھ پیلے ہوجائیں“۔...