اسے مت پڑھ، پچھتائے گا - سید اختر عباس جلالی

یوں تو جنس مخالف کی کشش ایک قُدرتی عمل ہے۔ ہر کسی کی خواہش ہوتی ہے کہ جنس مخالف سے روابط ہو، بات چیت ہو، عشق و عاشقی کی باتیں ہوں لیکن معاشرتی اقدار، حد حدود اور اسلامی اصولوں کو ماننا اور تہذیب و تمدن کا خیال رکھنا معاشرے کے ہر فرد کی ذمہ داری ہے تاکہ جہاں ہم رہ رہے ہیں وہاں امن اور سکون قایم و...