توہین رسالت کا قانون اور سزا – حافظ محمد زبیر

بہت سے دوست توہین رسالت کے قانون اور اس کی سزا کے بارے سوال کرتے ہیں۔ یہاں تین سوال اہم ہیں۔ ایک یہ کہ دین اسلام میں اس شخص کی سزا کیا ہے کہ جو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو گالی دے؟ تو دین اسلام میں ایسے شخص کی سزا موت ہی ہے مزید پڑھیں

جب میں مشال خان بنتے بنتے بچا – صاحبزادہ محمد امانت رسول

“90ء کی دہائی میں، میں لاہور آیا۔ گوجرانوالہ سے بی اے اور درس نظامی کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد خوش قسمتی سے لاہور آتے ہی مجھے ایک مسجد میں خطابت مل گئی جہاں میں نے تقریباً 3 سال تک فرائض انجام دیے اور پھر بعد وہاں سے نکال دیا گیا۔ ہوا کچھ یوں کہ مزید پڑھیں

مرتدین کے خلاف جنگ، مردان واقعہ، اور ماورائے عدالت قتل – تزئین حسن

کہتے ہیں عرب کی تاریخ میں کوئی خبر کبھی اتنی تیزی کے ساتھ نہیں پھیلی جتنی آ نحضرت صلیٰ اللہ علیہ وسلم کی رحلت کی. بہت کم اس بات کا ذکر کیا جاتا ہے کہ اس نازک وقت میں مکّہ اور مدینہ اور اس کے اردگرد محدود علاقے کو چھوڑ کر پورا عرب بغاوت پر مزید پڑھیں

دو ہجوم – سعید بن عبدالغفار

ناگہانی موت افسردگی طاری کر دیتی ہے لیکن پتہ نہیں کیوں آج اخبار میں ایک خبر پڑھ کر افسوس کے ساتھ ساتھ ذہن کو تفکرات نے بھی گھیر لیا۔ خبر کچھ یوں تھی کہ ارجنٹائن میں بپھرے ہوئے ہجوم نے ایک نوجوان کو کھیل کے میدان میں جان سے ماردیا۔اس 22 سالہ نوجوان کاقصورکیاتھا؟ اس مزید پڑھیں

’’مشعال قتل ہوں گے‘‘ – احسان کوہاٹی

’’مشعال قتل ہوں گے‘‘ ’’کیا؟ کیا؟ کیا کہا۔۔۔؟‘‘سیلانی کے دوست نے چونک کراسے گھورا، اسکے ہاتھ میں تھامے ہوئے چائے کے کپ کا سفر راستے ہی میں رک گیا تھااسکی نظریں سیلانی پر جمی ہوئی تھیں بلکہ سیلانی یہ کہے کہ وہ اسے گھور رہا تھا تو غلط نہ ہوگا ’’میں نے یہ کہا ہے مزید پڑھیں

سفاکی سے ہنستی اک نعش – حافظ یوسف سراج

عبدالولی خان یونیورسٹی کے ہاسٹل نمبر ایک کے فلور پروہ نعش پڑی تھی۔ یہ نعش عریاں تھی۔ اس کے قابلِ ستر انسانی اعضا بھی کپڑوں سے عاری ہو چکے تھے۔ اس پر تشدد ہوا تھا۔ یہ تشدد معمولی نہیں تھا۔ کم از کم بیالیس مشتعل جوانیوں کے زورِ بازو اور زورِ جذبات نے اس نعش مزید پڑھیں

مشعال خان اور نورین لغاری، تصویر کے دو رخ – ثمینہ رشید

مشعال خان کے بہیمانہ قتل کی تفتیش میں ہر روز ناقابل یقین قسم کے واقعات سامنے آ رہے ہیں۔ یہ تصور کرنا بھی محال ہے کہ ایک یونیورسٹی انتظامیہ نے ایک طالب علم کے قتل کی سازش کی اور اس کو انجام تک پہنچایا۔ مشعال خان کے دوست عبداللہ اور یونیورسٹی کے ایک طالبِ علم مزید پڑھیں

توہین رسالت اور طرز احتجاج – ابو محمد

ہماری عوام اسٹیج پر کام کرتے ہوئے اداکار جیسی ہے جسے لاؤڈ ایکسپریشنز دینے پڑتے ہیں، ہنسنا بھی زور سے پڑتا ہے، رونا بھی زور سے، خوشی اور غم کے تاثرات بھی بہت زیادہ کر کے دکھانے پڑتے ہیں کیونکہ معمولی تاثرات تو آس پاس کے شور میں دب جاتے ہیں. منطقی اعتبار سے اسے مزید پڑھیں

اہانت اور گستاخی ایک حساس مسئلہ – ارشد زمان

آئیے ایک مسلمان کی حیثیت سے ایک مشترکہ نکتے پہ سوچتے ہیں۔ ایک لمحے کے لیے اس موضوع کوایک سائیڈ پہ رکھ لیتے ہیں کہ مشال خان مجرم تھا یا ملزم؟ گناہ گار تھا یا بےگناہ؟ اپنوں نے مارا یا غیروں نے؟ مذہب نے مارا یا سیاست نے؟ ریاست کو مارنا چاہیے تھا، ہجوم نے مزید پڑھیں

کہیے اور سمجھیے ! یا سمجھا دیجئے – گل رانا

دنیا میں کئی طرح کے لوگ ہوتے ہیں۔لبرل، انتہا پسند، اعتدال پسند۔ہر مذہب میں ایسے افراد موجود ہیں ۔ ہم میں سے ہر اک شخص جتنی بھی تعلیم حاصل کر لے لیکن اپنی فطرت سے دور نہیں بھاگ سکتا۔ ہم جیسے ہیں ویسے ہی رہتے ہیں۔ہم اچھائی اور برائی میں بھی اپنی اپنی پسند کے مزید پڑھیں