انڈونیشین ویڈیو اور سعودی تصویر میں عورت - حافظ یوسف سراج

جذبات کی شدت سے اس کا نازک بدن لرز رہا تھا۔ وہ ایک دبلی پتلی انڈونیشین لڑکی تھی۔ چڑھی ندی جیسے جذبات اس کے وجود کو یوں لرزا اور لہرا رہے تھے گویا وہ آندھیوں میں رکھا کوئی چراغ ہو۔ اس کے لرزتے لبوں سے لفظ کم اور سسکیاں زیادہ برآمد ہو رہی تھیں۔ گو وہ اپنی قومی زبان میں شدتِ جذبات سے بھیگے لہجے میں...