اٹھو نا! مجھے تمہاری ضرورت ہے (4) – اسری غوری

اماں بی کے داخل ہوتے ہی سارے بیٹے کھڑے ہوگئے تھے یہی احترام راشدہ بیگم کی تربیت کا خاصہ تھا بڑے ابا نے آگے بڑھ کر اماں بی کا ہاتھ تھاما اور انہیں سامنے درمیان والے صوفے پر بٹھایا اور خود انکے ساتھ بیٹھ گئے شازل بھیا اب بھی اماں سے چپکے ہوئے تھے شانی مزید پڑھیں

سلفی، قادری، نقشبندی صاحب – معلمہ ریاضی

خطیب صاحب کا جوشیلا خطبہ جاری تھا، اللہ کا حکم ہے امر بالمعروف و نہی عن المنکر، بھلائی کا حکم کرو اور برائی سے روکو. کیسے روکو گے؟ ہاتھ سے روکو، ہاتھ سے نہ روک سکو تو زبان سے روکو، زبان سے نہ روک سکو تو دل میں برا سمجھو، مگر یہ ایمان کا سب مزید پڑھیں

لائی حیات، آئے – ڈاکٹر رضوان اسد خان

ایک ساتھ پیدا ہونے کے بعد بچپن سے جوانی تک ہر کام ایک ساتھ کرنے والے عمران اور عرفان نے فیصلہ کیا کہ شادیاں بھی ایک ہی دن کریں گے. عمران کی منگ اس کی خالہ زاد ’’ملکہ‘‘ تھی اور اسی کی بہن ’’رانی‘‘ عرفان کی منگیتر تھی. اور یوں شریف آباد گاؤں میں ان مزید پڑھیں

دعا اور خوشی – حنا نرجس

کیمروں کی فلیش لائٹس کا رخ سٹیج سے بھی زیادہ اس میز کی طرف تھا جہاں بہت ہی خوبصورت، گول مٹول، بڑی بڑی روشن آنکھوں والی، پیارے سے گوٹا کناری والے لباس میں ملبوس دو بچیاں ایک خاتون کی گود میں براجمان تھیں. ان کی دلکشی کی سب سے بڑی وجہ شاید ان کی خوش مزید پڑھیں

کہانی کا راجا اور بوڑھا ملنگ – محمد زبیر قلندری

جیسے ہی ملاح نے چپو دریا میں ڈالا، کشتی ایک ہچکولے سے چل پڑی. یہ ان دنوں کی بات ہے جب میں چھٹی جماعت میں پڑھتا تھا. ابّا جان گاؤں میں اپنے ایک دوست کو ملنے آئے تو مجھے بھی ساتھ لے آئے. دوست کا گھر دریا کے پار تھا!میں کچھ خوف اور کچھ دلچسپی مزید پڑھیں

شب کا مسافر – سخاوت حسین

شام کے سائے گہرے ہو چکے تھے۔ شفق پر سورج کی سرخ لکیر الوداع ہوتے مسافر کے آخری سلام کی طرح دور پردہ افق سے الوداعی سلام کہہ رہی تھی۔ لاہور کی سڑکوں پر اسی طرح گہما گہمی تھی۔ چنگ چی رکشے اپنے سفر پر رواں دواں تھے۔ بازاروں میں لوگوں کا ہجوم تھا۔ مجھے مزید پڑھیں

ٹارگٹ کلر – ریحان اصغر سید

اپنے فلیٹ کی بلڈنگ سے نکل کر میں نے محتاط انداز میں گردوپیش کا جائزہ لیا۔ رات کے گیارہ بج چکے تھے، شہر کے اس حصے کی سڑکوں کی رونق ماند پڑ رہی تھی اور اکا دکا لوگ آتے جاتے نظر آ رہے تھے۔ میں تب تک بلڈنگ کے سامنے پارکنگ کے تاریک گوشوں میں مزید پڑھیں

پانچ قسم کے بے ہودہ خاوند – کنہیالال کپور

اگر کسی مرد سے پوچھا جائے پانچ قسم کے بے ہودہ خاوند کون سے ہوتے ہیں، تو وہ کہے گا ’’صاحب! عقل کے ناخن لیجیے۔ بھلا خاوند بھی کبھی بے ہودہ ہوئے ہیں۔ بے ہودگی کی سعادت تو صرف بیویوں کے حصے میں آئی ہے۔‘‘ اور اگر کسی عورت سے یہی سوال کیا جائے، تو مزید پڑھیں

اٹھو نا! مجھے تمہاری ضرورت ہے (3) – اسری غوری

رات کے تیسرے پہر جب ہر اک نیند کی وادیوں میں غرق تھا، رات خود بھی تھک کر نڈھال ہوکر اک نیند لینے کو دنیا و مافیا سے بےخبر ہو رہی تھی، عین اسی وقت آسمان کے آخرے کونے پر صدائیں لگاتی رب کی ذات ’’کوئی ہے جو مجھ سے مانگے، اور میں اسے عطا مزید پڑھیں

اب محبت جس سے بھی ہوگی – نصرت یوسف

’’چھوٹا ذہن یا محدود ذہنیت انسانوں پرگفتگو کرتی ہے، اوسط درجہ کی ذہنیت واقعات پر بات چیت کرتی ہے اور تخلیقی ذہن نت نئے تصورات پر اڑان بھرتاہے.‘‘ سندیلہ انعم کے ذہن میں یہ فلسفہ ہمیشہ ہی زندہ رہتا۔ وہ ہمیشہ اپنے آپ کو تخلیقی ہی رکھنا چاہتی، محدودیت اور عمومیت کے درجہ پر آ مزید پڑھیں