ڈاکٹر رابعہ خرم درانیدل میں جملوں کی صورت مجسم ہونے والے خیالات کو قرطاس پر اتارنا اگر شاعری ہے تو رابعہ خرم شاعرہ ہیں، اگر زندگی میں رنگ بھرنا آرٹ ہے تو آرٹسٹ ہیں۔ سلسلہ روزگار مسیحائی ہے. ڈاکٹر ہونے کے باوجود فطرت کا مشاہدہ تیز ہے، قلم شعر و نثر سے پورا پورا انصاف کرتا ہے-

میں عورت ہوں - ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

دیکھو میں عورت ہوں .. اور تم دونوں جو کبھی دوست تھے آج ایک دوسرے کے دشمن بنے بیٹھے ہو .. .میں تم دونوں کے گھر کی عورت ہوں . تم میں سے کسی کی ماں کسی کی بہن کسی کی بیٹی اور کسی کی بیوی. .تم ایک دوسرے پر جب غیظ و غضب سے چلاتے ہو تو میرے کردار کی دھجیاں کیوں بکھیرتے ہو .. مجھ پر تہمت کیوں لگاتے ہو ...