پاکستان میں رویتِ ہلال کے فیصلے کے لیے قانونی نظام – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

برطانوی قبضے کے دوران میں ان علاقوں میں جو اب پاکستان کا حصہ ہیں، رؤیتِ ہلال کے فیصلوں کے لیے دو طرح کا نظام رائج رہا: جن علاقوں میں مسلمانوں کی مرکزیت کسی طرح قائم رہی، جیسے ریاستِ سوات یا ریاستِ دیر، وہاں عوام حکومتی فیصلے ہی کی پابندی کرتے رہے؛ جہاں ایسی مرکزیت باقی مزید پڑھیں

روایت پسندوں پر ”تلبیسانہ تجدد“ کا الزام – محمد زاہد صدیق مغل

ایک اہل علم استدلال فرماتے ہیں کہ: ”فقہی روایت میں بعض دفعہ یوں ہوتا ہے کہ متقدمین ایک مسئلے میں نصوص کو محتمل مان کر اجتہادی طور پر اضافی وجوہ سے کسی پہلو کو ترجیح دے رہے ہوتے ہیں۔ لیکن جب کوئی رائے عمومی قبولیت حاصل کر لیتی ہے تو متاخرین اختلافی رائے کی گنجایش مزید پڑھیں

انتخابات کفر نہیں – علی عمران

ہمارے ہاں انتخابات کے عمل کو اختیار کرنے والوں کو کافر قرار دے کر ان کا خون مباح کیا جاتا ہے، جس کا ایک حالیہ مظہر ڈپٹی چیئرمین سینٹ کے قافلے پر بدترین خودکش حملہ ہے، حلانکہ انتخابات اور جمہوریت ایک چیز تو کیا، سرے سے لازم و ملزوم بھی نہیں ہیں. بلکہ عین ممکن مزید پڑھیں

غلامی کا خاتمہ کس نے کیا؟ اسلام یا مغرب؟ ادریس آزاد

کل میں نے چند جملے پوسٹ کیے جن میں لکھا تھا کہ: ’’اسلام نے جب حکم دیا کہ غلاموں کو اپنے جیسی غذا اور لباس دو اور شرعاً غلاموں کا جائیدادا میں حصہ رکھ دیا تو کیا قیامت خیز قسم کا انقلاب برپا ہونا شروع ہوا جس کی مثال نہیں ملتی۔ وہ انسان جن کی مزید پڑھیں

اصحاب المورد اور ڈس کریڈٹ کرنے کا واویلا – محمد زاہد صدیق مغل

ہم نے المورد کی سیاسی فکر کو چند کمنٹس میں سیکولرازم کے ساتھ کیا وابستہ کیا کہ متاثرین المورد (جن میں سے کچھ تو اکثر و بیشتر ”دوسروں کو“ اخلاقی وعظ ہی فرمانے کا فریضہ سرانجام دیتے ہیں) نے میرے ایک کمنٹ کو لے کر واویلا شروع کر دیا، جس کا حاصل یہ تھا کہ مزید پڑھیں

چند مسلم ممالک اتنی سی طاقت بھی کیونکر حاصل کر سکے؟ – حامد کمال الدین

سلسلۂ مضامین: ’’عالم اسلام کے گرد گھیرا؛ پوسٹ کولڈ وار سیناریو سمجھنے کی ضرورت‘‘ 4 عالم اسلام میں جو کچھ ’بڑے سائز‘ کے ملک پائے جاتے ہیں یا کچھ مضبوط فوجوں یا اہم سٹرٹیجک حیثیت کی مالک ریاستیں ہیں، ان کے ساتھ دشمن کی بےرحمی پچھلے سات عشروں کے دوران ایک حد سے نہیں بڑھ مزید پڑھیں

73 فرقوں میں رسول ﷺ کا فرقہ اور کامن سینس – مجیب الحق حقی

مسلمانوں میں 73 فرقوں والی حدیث سے سب ہی واقف ہیں۔ اس حدیث مبارکہ کو امام ترمذی رحمتہ اللہ علیہ نے عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ سے روایت کیا ہے کہ آپ ﷺ نے کچھ ایسافرمایا، جس کا مفہوم یہ ہے کہ مسلمانوں میں بھی ہو بہو ہر وہ برائی ہوگی جو بنی مزید پڑھیں

مباحث فطرت و اخلاق : بحث کیا ہے؟ چند غلط فہمیوں کا ازالہ – محمد زاہد صدیق مغل

”فطرت بطور ماخذ“ کا انکار کرنے والے گروہ پر نقد کرتے ہوئے احباب غیر متعلق و غلط فہمیوں پر مبنی استدلال پیش کرتے ہیں، مناسب معلوم ہوتا ہے کہ اختصار کے ساتھ ان کی وضاحت کردی جائے تاکہ کم از کم گفتگو تو نفس موضوع پر ہوا کرے۔ پہلی غلطی: اس ضمن میں پہلی غلطی مزید پڑھیں

دوسرے درجےکا ’شہری‘ تیسرے درجے کا ’انسان‘ – حامد کمال الدین

یہ چند گزارشات فقہائے اسلام کے بعض مقررات پر اصحابِ مورد کے اعتراضات کے سلسلہ میں ہیں، جن میں یہ ’’دار الاسلام‘‘ یا ’’جماعۃ المسلمین‘‘ کے اہل ذمہ کو ’دوسرے درجے کا شہری‘ کہہ کہہ کر چوٹیں فرما رہے ہیں۔ اس کا تھوڑا اندازہ مجھے محترم علی عمران صاحب کی پوسٹیں دیکھ کر ہوا، جن مزید پڑھیں

ایک ملحد اور مؤمن کا مکالمہ – محمد فیصل شہزاد

الحاد کا لفظ عربی زبان میں لغوی اعتبار سے، انحراف یعنی درست راہ سے ہٹ جانے کے معنوں میں آتا ہے. عموماً اس لفظ کا الحاق وجودِ خدا، نبوت و رسالت اور موت کے بعد کی زندگی یعنی آخرت میں سے کسی ایک کے یا تینوں کے انکار پر کیا جاتا ہے اور یہ انکار مزید پڑھیں