لیلۃ الجائزۃ ،انعام والی رات - محمد احمد رضا

رمضان المبارک اللہ کریم کی خاص رحمتوں اور برکتوں کا مہینہ ہے۔ اس ماہ مقدس میں اللہ کریم ایک عبادت کا ثواب کئی گنا بڑھا دیتا ہے۔ اللہ کریم نے اس ماہ مقدس میں خاص عبادت تراویح اور روزے عطا کئے۔ آخری عشرہ میں لیلۃ القدر کی شکل میں عظمت، برکت، رحمت، نجات، مغفرت، بخشش اور ایک ہزار راتوںسے زیادہ افضلیت والی خاص رات عطا فرمائی ہے۔

ماہِ مقدس کے ختم ہوتے ہی اللہ تعالی نے جو پہلی رات عطا کی وہ عید الفطر کی رات ہے اور اسے لیلۃ الجائزۃ (انعام والی رات) کا نام دیا گیا۔ گویا کہ سارا مہینہ عبادتوں کی جو کھیتی بوئی ہے یہ رات اس کھیتی کا پھل لینے کی رات ہے۔حدیث شریف میں ارشاد ہے کہ؛ عن ابی امامۃ رضی اللہ عنہ عن النبی ﷺ: خمس لیال لا ترد فیھن الدعوۃ اول لیلۃ من رجب و لیلۃ النصف من شعبان و لیلۃ الجمۃ و لیلۃ الفطر و لیلۃ النحر۔ حضرت ابو امامۃ رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ پیارے آقا ﷺ نے فرمایا کہ پانچ راتیں ایسی ہیں جن میں دعائیں رد نہیں ہوتیں، ۱: رجب کی پہلی رات، ۲: شعبان کے ماہ کی درمیانی رات یعنی شب براء ت، ۳: جمعۃ المبارک کی رات، ۴: عید الفطر کی رات، ۵: عید الاضحی کی رات۔( مصنف عبد الرزاق)۔

حضرت عبادۃ بن صامت رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ نبی اکرم ﷺ نے فرمایا : جس نے عید الفطر اور عید الاضحی کی رات کو نوافل ادا کئے، اس کا دل اس دن مردہ نہ ہو گا جس دن (لوگوں) کے دل مردہ ہو جائیں گے۔ (المعجم الاوسط)۔ امام ابو بکر احمد بن الحسین البیھقی اپنی کتاب فضائل الاوقات صفحہ 252 پر لکھتے ہیں (ترجمہ)؛ جب لیلۃ الفطر ہوتی ہے جس کا نام لیلۃ الجائزۃ (یعنی انعام والی رات) رکھا گیا ہے، پس جب فطر کی شام ہوتی ہے تو اللہ تعالی ہر شہر میں فرشتوں کو بھیجتا ہے، وہ زمین پر اترتے ہیں اور اس کے کناروں پر کھڑے ہو جاتے ہیں، پس وہ اعلان کرتے ہیں اور ان کی آواز کو جن و انس کے علاوہ ہر مخلوق سنتی ہے، پس وہ کہتے ہیں؛ اے امت محمدیہ، اپنے رب کی طرف نکلو کہ وہ تمہیں بہت عطا کرے اور تمہارے گناہ کبیرہ کو معاف فرمائے، پس جب لوگ اپنے رب کے حضور قیام کرتے ہیں تو اللہ تعالی فرماتا ہے اے ملائکہ :

جو عمل اس (بندے) نے کیا اس کا کیا اجر دوں؟ فرشتے عرض کرتے ہیں اے ہمارے رب ، اس کو پورا اجر عطا کر، اللہ تعالی فرماتا ہے اے میرے فرشتو میں تمہیں گواہ بناتا ہوں کہ میں نے (رمضان میں عبادت کرنے والوں) کے روزوں، ان کے قیام /نمازوں کا ثواب اپنی رضا اور مغفرت کی صورت میں بنا دیا، اور وہ فرماتا ہے اے میرے بندو، مجھ سے مانگو، پس مجھے میری عزت اور جلال کی قسم آج تم جو کچھ طلب کرو گے میں عطا کروں گا۔حضرت ابو عبد اللہ محمد بن نصر بن الحجاج المروزی (المتوفی 294 ہجری) اپنی کتاب قیام اللیل و قیام رمضان و کتاب الوتر میں نقل فرماتے ہیں کہ: عن مجاھد: لیلۃ الفطر کلیلۃ من لیالی العشر الاواخر یعنی فی فضلھا۔ حضرت مجاہد رحمۃ اللہ علیہ سے مروی ہے کہ عید الفطر کی رات فضیلت میں (رمضان کی) آخری دس راتوں کی مانند ہے۔ مصنف عبد الرزاق میں ہے : حضرت نافع رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ عید الفطر کی رات مسجد میں گزارا کرتے تھے۔

محترم قارئین! احادیث مطہرہ و آثار اسلاف سے یہ بات روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ عید الفطر کی رات عبادت کرنے کی رات ہے۔ یہ وہ رات ہے جس میں اللہ کریم رمضان المبارک کے ماہ مقدس میں عبادت کرنے والوں کے لئے اعلان فرماتا ہے کہ آج کی رات جو مانگنا ہے مانگ لو۔ یہ وہ عظیم رات ہے جسے لیلۃ الجائزہ کہا گیا ہے یعنی انعام و اکرام والی رات۔ اس رات میں مانگی جانے والی دعائیں رد نہیں کی جاتیں۔
لیکن افسوس آج ہم چاند رات کے نام پر، بازاروں، محلوں، گلی کوچوں میں غل غپاڑہ کر کے اس رات کی رحمت و برکت، مغفرت و بخشش اور اللہ کریم کے انعام و اکرام سے محروم ہو جاتے ہیں۔ پورا ماہ مقدس عبادت کرتے ہیں لیکن جب انعام ملنے کی رات آتی ہے تو ہم عشاء کی نماز ادا کرنا بھی بھول جاتے ہیں۔

یہ خوشی کی رات ہے، ہمیں خوشی منانی چاہئے، رشتہ داروں سے ملنا چاہئے، ضرورت کی اشیاء کے لئے بازار وغیرہ بھی جانا جائز ہے بلکہ اہل خانہ کی ضروریات کو پورا کرنا بھی عبادت اور صدقہ ہے۔ ہمارے ہاں المیہ یہ ہے کہ جیسے ہی رمضان المبارک کے بعد عید الفطر کا چاند نظر آتا ہے اور روایات کے مطابق شیطان کو آزاد کر دیا جاتا ہے تو ہم فورا شیطان کے حملوں کا شکار ہو جاتے ہیں۔ عید الفطر کی رات کو ہم اللہ کی عبادت اور نماز تک کو بھول جاتے ہیں۔ نفلی عبادتیں، نوافل نماز تو بہت دور کی بات ہمارے ہاں تو بہت کم افراد عشاء کی نماز اور صبح فجر کی نماز ادا کرتے ہیں۔ہمیں چاہئے کہ اس انعام و اکرام والی رات میں زندگی کے باقی امور کے ساتھ ساتھ کم از کم فرائض عبادتوں کے ساتھ ساتھ نوافل و تسبیحات پڑھ کر اللہ کریم کی بارگاہ میں دعا کر کے رحمت، برکت، مغفرت، بخشش ، انعام و اکرام لینا مت بھولیں۔ اللہ کریم ہمیں رمضان المبارک اور لیلۃ الجائزۃ کی برکتیں عطا فرمائے۔ آمین۔

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com