[نظم کہانی] ارے قائداعظم بھی - محمد عثمان جامعی

”دیانت دار اور سچے تھے اپنے قائداعظم

اصولوں کے بہت پَکّے تھے اپنے قائداعظم

کہیں بھی ملک سے باہر نہیں تھی کمپنی کوئی

کہیں پردیس میں ان کی نہ تھی کوٹھی بنی کوئی“

بتایا جب یہ اُستانی نے تو حیراں ہوا خُرم

ہوئی حیرانی جب کچھ کم تو بولا ہو کے وہ برہم

”تو ہم سے جھوٹ کیوں بولا گیا اتنے تواتر سے

بتایا کیوں نہیں ہم کو وہ اچھائی کا پیکر تھے

سبھی کیوں کہتے ہیں قائد سیاست داں تھے لیڈر تھے؟“