تاریک راتیں - سماویہ وحید

راتیں کس قدر تاریک ہے...کس قدر تاریک ہیں....فلسطین میں ہمیں گھروں سے بے گھر کیا جارہا ہے....ہماری مسجدِ اقصٰی رو رہی ہے....ہمارا کعبہ کافروں کے گھیرے میں ہے....ہمارا کشمیر لہو رنگ ہے....عراق میں حامی کٹ رہیں ہیں....ماؤں کے سامنے بچوں کو انگاروں پر لٹایا جا رہا ہے....ماؤں کی درد ناک چیخیں پوری انسانیت کو سنائی جارہی ہے.

کہا ہیں وہ لوگ جن کو معصوموں کی آہیں سنائی جارہی ہیں.....کہا ہیں وہ مسلمان جو مظلوم مسلمانوں کی آہیں سنتے ہیں....کہا ہیں وہ ظالم جو مسلمانوں کی دردناک چیخیں سنتے ہوئے بھی بے ہوش ہیں...کہا ہے وہ نیک انسانیت جن کے خون میں جذبہ نہیں رہا....کہا ہے امت محمدیہ صہ جو ایک مسلمان کو دیکھ کر اپنی تکلیف سمجھتی تھی......کہا ہیں ایمان کے رکھوالے.....کہا ہیں کلمہ گو.....کہا ہے اسلام کے عاشق.....کہا محمد صہ کے عاشق....لٹ گئے مسلمان....لٹ گئی مائیں....لٹ گئے بچے.....لٹ گئے آباؤ اجداد.....لٹ گئی دنیا.....لٹ گئی عزتیں.....میرے عزیزوں مسلمان قتل کیے جا رہے ہیں....اور ہم.....ہم خاموش....کیوں خاموشی؟؟؟..... تباہ ہوگئی دنیا....

ہائے افسوس امتِ محمدیہ صہ پر ....ِ ہائے کمبختی مسلمانوں کی......اپنے مظلوم مسلمانوں کی آہیں سنتے ہوئے بھی بہرے, گونگے اور اندھے ہوگئے ہیں....میں پوچھتی ایمان والوں سے.....اے یومِ آخرت کے ماننے والوں اگر تمھارے سامنے تمھارے بھائی کو زمین میں زندہ درگور کیا جائے تو کیا تمھارا دل تڑپے گا نہیں؟......تمھارے سامنے تمھاری ہی اولاد کو سنگسار کیا جائے تو کیا تمھارا خون خول نہیں اٹھے گا؟......کیا سمجھا ہے مسلمانوں تم نے؟؟؟کیا یہ تمھارے بھائی, بہن, اولاد نہیں ہیں؟؟؟..... جن کی چیخیں تم بے دردی سے سنتے ہو......مسلمانوں کیا تمھارے اندر انسانیت نہیں رہی؟.....کیا تمھاری روحیں بے رحم ہوگئی ہیں....تم سب مفاد پرست ہو چکے ہو جبھی تو کافر تم پر اپنا قبضہ مسلط کیے بیٹھیں ہیں....تم لوگوں نے کافروں کو اپنا دوست بنا لیا ہے...جبھی تو تم ظالم کا ظلم دیکھتے ہوئے بھی اندھے, گونگے اور بہرے ہو گئے ہو....

افسوس اہلِ ایمان پر....آہ افسوس امتِ محمدیہ صہ پر..... کیا تم محمد صہ کی حدیث کو فراموش کر بیٹھے ہو.....جس میں صاف لفظوں میں کہا گیا ہے کہ اے مسلمانوں تم آپس میں بھائی بھائی ہو....کیا یہ حدیث تمھاری نظروں سے اوجھل ہوگئی ہے..... تم تو ایک امت کے کہلوانے والے ہو تو پھر کیوں اس حدیث کو نظر انداز کیے بیٹھے ہو.....مسلمان تو وہ ہے جو دوسرے مسلمان کا درد محسوس کرتا ہے.....کمبختی ہے ایمان والوں تمھاری اگر تم یہ سب بھولا چکے ہو......دراصل بات مختصر ہے ہمارا ایمان کمزور ہو چکا ہے جبھی تو ہم کافروں کے غلام ہیں.....

خدارا....ہوش کے ناخن لے لو میرے بھائیوں اور بہنوں ...... مظلوموں کی چیخیں ہمیں آواز دے رہی ہیں.....ان کی چیخیں دنیا کو ہلا دینے والی ہے......ہم سے فریاد کر رہی ہیں .....ہماری آنکھیں کیوں اتنی بے رحم ہوگئی ہیں کہ سب کچھ دیکھتے ہوئے بھی کوئی اقدام نہیں اٹھاتے...... خدارا ایک بار تو اپنے اوپر رکھ کر سوچ لو کہ اگر ہمارے خاندان پر یہ وقت آجائے تو ہم کیا کریں گئے جب کہ ہمارے پاس کوئی ہمدرد موجود نہیں ہوگا......اہلِ ایمان تمھاری غیرت کہا ڈوب گئی؟؟؟؟.......تمھاری عزتِ نفس کہا کھو گئی ہے؟؟؟.......امت کے رکھولے تمھیں آوازیں دے رہے ہیں.......

ہمیں دوسروں کے دکھ درد بانٹنے ہوگئے....یکجا ہو کر کافروں سے لڑنا ہوگا تاکہ وہ ہمارے مظلوموں کی نسل کشی سے باز آجائیں.....اللّہ آپ ہمارے مظلوم مسلمانوں کا دست و بازو بن جائیں.....ان کو صبرِ جمیل عطا فرمائیں اور ہمیں کافروں کے آگے ڈٹ کر مقابلہ کرنے کی توفیق عطا فرمائیں. (آمین)

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com