بلوچستان میں دو ہفتے اور آزاد کشمیر میں 3 ہفتے کا لاک ڈاؤن شروع

شہریوں کی غیر ضروری نقل وحرکت پر پابندی عائد

 مظفر آباد / کوئٹہ: کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کےلیے بلوچستان اور آزاد کشمیر میں بھی لاک ڈاؤن پر عملدرآمد شروع کردیا گیا۔

بلوچستان میں آج (24 مارچ) دوپہر بارہ بجے سے سات اپریل کی دوپہر بارہ بجے تک 14 روز کے لیے لاک ڈاؤن رہے گا۔ حکومت بلوچستان نے شہریوں کی نقل وحرکت پر پابندی عائد کرتے ہوئے ہر طرح کی تقریبات پر پابندی لگادی اور سرکاری و نجی دفاتر دو ہفتے کیلئے بند کردیے۔

کوئٹہ سمیت صوبے بھر میں شہریوں کی غیر ضروری نقل وحرکت پر پابندی عائد کردی گئی ہے تاہم ضرورت کے تحت شہریوں کو گھروں سے نکلنے کی اجازت ہوگی۔

آزاد کشمیر

ادھر آزاد کشمیر حکومت نے بھی کورونا وائرس سے بچاوٴ کے پیش نظر آج سے تین ہفتوں کا لاک ڈاوٴن شروع کردیا ہے۔ آج تمام چھوٹے بڑی کاروباری مراکز بند ہیں تاہم اشیاء خورونوش کی دکانیں اور میڈیکل اسٹورز کھلے ہیں۔

سڑکوں پر ٹریفک بہت کم ہے اور شہری گھروں سے باہر نکلنے سے گریز کررہے ہیں۔ سول حکام اور پولیس افسران کا نفری کے ہمراہ گشت جاری ہے اور شہریوں کو گھروں تک محدود رہنے کی ہدایات کی جارہی ہے۔

حکام نے خبردار کیا کہ کل سے غیر ضروری نقل وحرکت کرنے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے گی۔