[نظم کہانی] یک جہتی - محمد عثمان جامعی

”آج اسمبلی میں دیکھا وہ منظر میں نے آنکھ بھر آئی

یک جہتی ایسی تھی جیسے بیٹھے ہوں سب بھائی بھائی

تُوتُو میں میں تھی آپس میں، اور نہ کوئی محاذ آرائی

ہم آواز تھے سارے ارکاں، کرتے تھے جو روز لڑائی“

”قومی مفاد کا مسئلہ ہوگا

درد عوام کا اُٹھا ہوگا

حُب وطن پر ایکا ہوگا

یا مذہب کا معاملہ ہوگا“

”ایسا ہی میں نے سمجھا تھا

پھر مجھ پر یہ راز کُھلا تھا

اسمبلی کے ارکان کی تنخواہ

بڑھانے کا بِل پیش ہُوا تھا“