نور کی کلی تھا وہ - سمیرا غزل

نور کی کلی تھا وہ

عشق کی گلی تھا وہ

ساز حق سنا گیا

حرف حق جلی تھا وہ

حیدری اڑان تھی

وقت کا ولی تھا وہ

جان حق پہ دینے کو

شیر سا علی تھا وہ

جہد کی اذان تھا

رن میں کھلبلی تھا وہ

راہ یاب جو ہوا

رب کا اردلی تھا وہ

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com