بچوں پر بھی نظر رکھیں - بینیش صابر

آج کل کرونا وائرس نے سب کو گھروں میں محصور کر دیا ہے پوری دنیا میں عجیب خوف اور اضطراب کی کیفیت ہے . اسکول بند ہونے کی وجہ سے جہاں بچے گھروں میں ہے تو ماں باپ کے لیے انہیں سنبھالا اور مصروف رکھنا ایک بڑا مسئلہ ہے. باہر نکلنا بند ہے لہذا بچوں کے لیے تفریح کا واحد ذریعہ گھر میں موبائل فون ٹی وی اور ویڈیو گیمز وغیرہ ہیں.

ویسے بھی آج کل بچوں میں موبائل کا شوق اور گیمز اور بہت عام ہیں لیکن اب یہ کچھ زیادہ ہی بڑھ گیا ہے جس کی وجہ کسی اور متبادل تفریح کا موجود نہ ہونا ہے. ایسی صورت میں ماں باپ کو بچوں پر کڑی نظر رکھنے کی ضرورت ہے. بچے موبائل میں مصروف ہوں تو ماں باپ بھی سکون میں رہتے ہیں کہ ہمیں تنگ نہیں کر رہی اور خاموش ہیں بعض اوقات ماں باپ خود ان کے ہاتھ میں موبائل تھما دیتے ہیں یو ں موبائل بچے کے حوالے بلکہ بچے کو موبائل کے حوالے کردیا جاتا ہے کہ وہ اسے جو دکھائے اور جیسے مرضی اس کی تربیت کرے. ماں باپ کی ذمہ داری صرف پرورش اور اور روٹی کپڑا فراہم کرنا نہیں یہ کام تو جانور اور چرند پرند بھی بخوبی انجام دے رہے ہیں. ہم پر بحیثیت انسان اور اس سے بھی بڑھ کے بحیثیت مسلمان بہت بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے اور یہ ذمہ داری ہے ان کی تربیت اور ان کو اچھا انسان اور اچھا مسلمان بنانے کی ذمہ داری. اگر ہم نے اس ذمہ داری میں کوتاہی برتی تو ہمیں کل اللہ کے حضور جواب دے ہونا پڑے گا. حدیث میں آتا ہے" تم میں سے ہر ایک نگہبان ہیں اور ہر ایک سے اس کی رعیت کے بارے میں پوچھا جائے گا".

آج کل بچوں کے کارٹونز اور گیمز میں مارکٹائی عشق معشوقی اور بے حیائی بہت عام ہے. بچی نقال ہوتے ہیں اور جو دیکھتے ہیں اسے کاپی کرنے کی کوشش کرتے ہیں یوں وہ اپنا آئیڈیل اور رول ماڈل کارٹون کرداروں میں ڈھونڈتے ہیں. وہ ان کا رہن سہن طور طریقے اور بات چیت کا انداز اپناتے ہیں. جو بچہ بچپن سے ہی یہ سب دیکھتا ہوا بڑا ہو اس سے صحابہ اور صحابیات والے اخلاق اور کردار کی امید نہیں کی جاسکتی. وہ وہ زبان سے محمد صلی اللہ علیہ وسلم کو تو اپنا نبی مانے گا لیکن نبی کی سنت اور طریقے پر عمل کرنا اس کے لیے بہت ہی مشکل ہوگا.

اب آئیے اس کے حل کی طرف. سب سے پہلے تو بچے کو سمجھائیں کے جو کچھ بی انٹرنیٹ اور یوٹیوب پر دکھایا جاتا ہے وہ سب ہمارے دیکھنے کے لائق نہیں ہے آپ وہ سب چیزیں نہیں دیکھیں گے جو اللہ اور اس کے رسول کو ناپسند ہیں. بچے کی دلچسپی اسلامی کہانیوں اسلامی کارٹون اور معلوماتی اسلامی اور سائنسی ویڈیوز میں پیدا کریں. یوٹیوب پر بہت سارے بچوں کے اسلامی چینل موجود ہیں وہ دکھائیں بچوں کو. ان کے ساتھ وقت گزاریں خود انہیں اسلامی واقعات اور کہانیاں سنائیں ان سے ان کی باتیں سنیں.

بچہ جو سنتا اور دیکھتا ہے اس کی شخصیت پر اس کا گہرا اثر ہوتا ہے جس طرح آج کل آپ کرونا سے بچنے کے لئے گھروں میں مقید ہو کر رہ رہ گئے ہیں اور تمام احتیاطی تدابیر اختیار کر رہے ہیں اسی طرح اپنے بچوں کو ان تمام وائرسز سے بی بچانے کی کوشش کریں جو اسکرین کے ذریعےان کے دل دماغ اور فکر کو آلودہ کر سکتے ہیں

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com