سگریٹ نوش کینسر سے بچ سکتے ہیں

کیلیفورنیا: تمباکو نوشی کی علت میں مبتلا افراد کے لیے ایک خوشی کی خبرسامنے آگئی، اب سگریٹ نوش کینسر جیسے مہلک مرض سے بچ سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایک تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ سگریٹ نوشی کرنے والے افراد اگر باقاعدگی سے ورزش کریں تو کینسرے جیسے ناسور سے بچا جاسکتا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی ریاست کیلیفورنیا میں واقع ’اسٹینڈ فورڈ‘ نامی یونیورسٹی میں ہونے والی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ تمباکو نوشی کرنے والے کی فٹنس ہوگی تو اُسے کینسر کا مرض لاحق ہونے کے خطرات کم ہیں۔

تحقیقی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس نتیجے تک پہنچنے کے لیے 2979 ایسے افراد کا استعمال کیا گیا جو سگریٹ پیتے ہیں جبکہ 1602 افراد ایسے تھے جنہوں نے تمباکو نوشی ترک کر رکھی ہے۔

تمام افراد کو طب کے تحقیقی مراحل سے گزارنے کے بعد یہ نتیجہ اخذ کیا گیا کہ باقاعدگی سے روزانہ کی بنیاد پر ورزش کی جائے تو پھیپڑوں کے کینسر سے بچا جاسکتا ہے، تمباکو نوشی کرنے والے پھیپڑوں کے کینسر کی وجہ سے موت کے منہ میں جارہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق وہ افراد جنہوں نے تمباکو نوشی ترک کردی ہے ان کے پھیپڑوں کے کینسر میں مبتلا ہونا کا خطرہ 13 فیصد کم ہے، جبکہ فٹنس کے بعد 51 سے 77 فیصد خطرہ کم ہوجاتا ہے۔

اسی طرح وہ افراد جو سگریٹ نوشی کررہے ہیں ان کے کینسر میں مبتلا ہونے کا خطرہ 18 فیصد ہے جبکہ فٹنس کے بعد 84 سے 85 فیصد خطرہ کم کیا جاسکتا ہے۔

خیال رہے کہ ایسوسی ایشن آف آپٹومیٹرسٹس کے ایک سروے کے مطابق ہر پانچ تمباکو نوش افراد میں سے صرف فرد اس حقیقت سے آگاہ ہے کہ تمباکو نوشی اندھے پن کا بھی باعث بن سکتی ہے۔