برطانیہ کا شاہی جوڑا شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ مڈلٹن کا دورہ پاکستان

برطانیہ کا شاہی جوڑا شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ شہزادی کیٹ مڈلٹن پانچ روزہ دورے پر پاکستان میں موجود ہیں۔ اپنے دورے کے پہلے روز شاہی جوڑا اسلام آباد میں مختلف سماجی سرگرمیوں میں حصہ لے رہا ہے۔ ایک سکول کے دورے پر انھوں نے اساتذہ اور بچوں سے ملاقاتیں کیں۔

شہزادی کیٹ نے پاکستان کی روایتی شلوار قمیض زیب تن کی ہوئی ہے جبکہ شہزادہ ولیم پینٹ شرٹ میں ہیں۔ شاہی جوڑے کی آمد پر سکول کے باہر انھیں ٹریفک پولیس کے اہلکاروں نے سلوٹ کیا۔ برطانوی ہائی کمیشن نے مقامی میڈیا کو منظم رہنے کی ہدایت کی ہے۔شاہی جوڑا پیر کی شب پاکستان پہنچا تھا اور راولپنڈی کے نور خان ائیر بیس پر ان کا استقبال کیا گیا تھا۔
شاہی جوڑے کو خیر مقدم کرنے کے لیے پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور ان کی اہلیہ موجود تھے اور جہاز سے اترنے پر شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ مڈلٹن کو پھولوں کے گلدستے پیش کیے گئے۔ واضح رہے کہ یہ شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ میڈلٹن کا پہلا دورہ پاکستان ہے تاہم برطانوی شاہی خاندان کے دیگر افراد ماضی میں پاکستان آچکے ہیں۔
سنہ 2006 میں شہزادہ ولیم کے والد شہزادہ چارلس نے اپنی اہلیہ، ڈچس آف کارن وال کامیلا پارکر کے ہمراہ پاکستان کا دورہ کیا تھا جبک ان کی والدہ'پرنسز آف ویلز شہزادی ڈیانا نےسنہ 1991، 1996 اور 1997 میں پاکستان کے دورے کیے تھے۔

اس پانچ روزہ دورے میں شاہی جوڑا اسلام آباد کے علاوہ لاہور اور شمالی علاقہ جات کا سفر کرے گا اور ان کی برطانیہ واپس روانگی 18 اکتوبر کو ہوگی۔ شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ مڈلٹن کی آمد کے موقع پر شاہی محل کنسنگٹن پیلیس کی جانب سے ٹویٹ کی گئی اور اس توقع کا اظہار کیا گیا کہ اس دورے کی مدد سے پاکستان اور برطانیہ کے تاریخی تعلقات کو اجاگر کیا جائے گا۔
شاہی جوڑے کی آمد پر پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود نے کہا کہ اس دورے سے بین الاقوامی سطح پر پاکستان کا مثبت اور پرامن چہرہ ابھر کر سامنے آئے گا۔ انھوں نے مزید کہا کہ یہ دورہ تاریخی اہمیت کا حامل ہے اور اس کی مدد سے برطانیہ اور پاکستان کے مابین دو طرفہ تعلقات مزید مستحکم ہونگے۔یاد رہے کہ برطانوی شاہی جوڑے کے دورے سے متعلق رواں برس جون میں اعلان کیاگیا تھا اور گذشتہ ماہ دورے کی تاریخوں کا باضابطہ اعلان کیا گیا تھا۔ شاہی جوڑے کی آمد پر پاکستانی سوشل میڈیا پر اسی حوالے سے مختلف ٹرینڈز چل رہے تھے جن میں شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ مڈلٹن کو پاکستان خوش آمدید کیا گیا۔ #RoyalVisitPakistan:

یہ بھی پڑھیں:   دو خبریں چار ممالک - حبیب الرحمن

بشکریہ بی بی سی اردو