علامہ خادم رضوی ، پیر افضل قادری، ڈاکٹر اشرف آصف جلالی گرفتار

پولیس نے انسپکٹر جنرل پنجاب پولیس کی ہدایت پر تحریک لبیک پاکستان کے امیر خادم حسین رضوی کو گرفتار کر لیا ہے۔ تحریک کے مرکزی قائد خادم حسین رضوی کو لاہور کے علاقے نواں کوٹ میں ان کے مدرسے سے گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق خادم حسین رضوی کو گرفتار کرنے کے لیے پولیس اور پنجاب رينجرز کا مشترکہ آپریشن کیا گیا۔ پنجاب پولیس کی جانب سے آپریشن کی قیادت ایس پی صدر نے کی، جنہیں رینجرز کی معاونت حاصل تھی۔

پولیس افسر کے مطابق آپریشن کے وقت پولیس اور مدرسے کے طلبا کے درمیان ہاتھا پائی بھی ہوئی جس میں مدرسے کے طلبہ نے ڈنڈے استعمال کیے۔ تحریک لبیک کے دوسرے قائدین ڈاکٹر اشرف آصف جلالی کو مانگا منڈی میں ان کی رہائش سے گرفتار کیا گیا جبکہ پیر افضل قادری اور دیگر کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔

پشاور اور مردان سمیت خیبر پختونخوا کے مختلف حصوں سے تحریک لبیک پاکستان کے راہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔ ملتان، خانیوال اور بہاول پور سمیت جنوبی پنجاب کے کئی شہروں اور قصبوں سے تحریک لبیک کی مقامی قیادت اور سرگرم کارکنوں کی گرفتاری کی اطلاع دی ہے۔

تحریک لبیک نے 25 نومبر بروز اتوار کو تحفظ ناموس رسالت کے حق میں ملک بھر میں احتجاج کا اعلان کر رکھا تھا۔ چند دن قبل آسیہ مسیح کی رہائی کے خلاف بھی ملک بھر میں دھرنا دیا گیا تھا۔ جسے ختم کرانے کے لیے پولیس کو آپریشن کرنا پڑا۔ لیکن دھرنا مذاكرات اور معاہدے کے بعد ختم کیا گیا۔