سراج الحق کی متوازن سیاسی فکر - ڈاکٹر غیث المعرفہ

معذرت کے ساتھ پاکستان کتنا بڑا ’’منافق‘‘ ہے
ایک طرف ایران کے ساتھ گیس پائپ لائن آگے بڑھانے کی کوششوں میں ہے اور کہتا ہے چاہ بہار سے ہمیں نقصان نہیں فائدہ ہی ہوگا۔
دوسری طرف سعودی عرب سے تیل کے تحفے اور قطر سے خطوط کے تحفے وصول کرتا ہے، اسلامی عسکری اتحاد کے لیے عملی طور سعودی عرب کا ساتھ دے رہا ہے۔
وہ کہتے ہیں
حسین سے بھی مراسم، یزید کو بھی سلام
پاکستان کو منافقت ترک کرتے ہوئے واضع پالیسی اختیار کرتے ہوئے یہ بتانا اور دکھلانا ہوگا کہ وہ کس کے ساتھ ہے۔

اس مطالبے پر آپ کیا محسوس کر رہے ہیں؟
مجھ پر خبطی ہونے کا شک کر سکتے ہیں یا پھر جذبات کچھ زیادہ سنگین ہوں تو ایرانی دلال یا سعودی ریال کا نمک خوار کہہ سکتے ہیں۔ آخر کو فیس بک پر ہم دوسروں کو ایجنٹ اور بدکردار کہنے سے زیادہ کر ہی کیا سکتے ہیں؟
لیکن سنیے تو
یہ معاملہ تو ہماری عالمی سیاست بارے تھا ذرا قومی سیاست میں تو دیکھیے.

یہ جو سراج الحق ہے، کتنا بڑا ’’منافق‘‘ ہے!
جس کے بارے کل ہی رانا ثناء اللہ صاحب کہہ رہے تھے ان کا تو پتا نہیں ہوتا کس کے ساتھ ہیں، بڑے کھلاڑی نے بھی وہی بات کہی تھی کہ پچ کے دونوں طرف کھیلنا بند کریں، ایک طرف ہی کھیلیں۔
ایک طرف تو یہ ن لیگ کو قومی اسمبلی میں اسپیکر پر ووٹ دیتے ہیں دوسری طرف انہی کے قائد نواز شریف کے خلاف پانامہ کیس میں مدعیت اختیار کرتے ہیں۔ ایک طرف کے پی کے میں تحریک انصاف سے اتحاد کیا ہوا ہے اور دوسری طرف آزاد کشمیر میں ن لیگ سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ کرتے ہیں۔
ایک بار پھر کہنا چاہیے
حسین سے بھی مراسم، یزید کو بھی سلام
-
کہا تو جاتا ہے کہ سماجی رابطوں نے ہمارے سیاسی شعور کو پختگی بخشی ہے لیکن آگاہی کبھی بھی دانائی کا مترادف نہیں ہوا کرتی۔ کاش کہ ہم سیاست میں متوازن پالیسی کو سمجھنے کے قابل ہو سکیں، چاہے وہ عالمی سیاست ہو یا قومی سیاست۔
بات یہ ہے کہ جیسے ایران پاکستان گیس پائپ لائن معاہدہ، پاکستان کو سعودی عرب کے اسلامی عسکری اتحاد کی قیادت کرنے سے نہیں روکتا ویسے ہی سراج الحق کا اسپیکر کو ووٹ دینا، ہر مرحلے جماعت اسلامی پر ن لیگ کی حمایت کرنے کا حکم نافذ نہیں کرتا اور کیا جماعت اسلامی اور تحریک انصاف کا کے پی کے میں اتحاد سے یہ معاہدہ طے پا گیا تھا کہ اب جماعت اسلامی اور تحریک انصاف کا نکاح ہو چکا ہے۔
لیکن ہمارا سیاسی شعور متوازن سیاسی فکر کو سمجھنے کے قابل ہی کہاں!

Comments

ڈاکٹر محمد غیث المعرفہ

ڈاکٹر محمد غیث المعرفہ

ڈی وی ایم، ایم فل جینیات۔ 2012ء سے بلاگنگ سے وابستہ ہیں۔ اسلام، سائنس، جدید رحجانات اور عالمی اسلامی تحریکیں پسندیدہ موضوع ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.