رُوح دیکھی ہے کبھی؟ گلزار

%da%af%d9%84%d8%b2%d8%a7%d8%b1 رُوح دیکھی ہے؟\nکبھی رُوح کو محسوس کیا ہے؟\nجاگتے جیتے ہوئے دُودھیا کہرے سے لپٹ کر\nسانس لیتے ہوئے اُس کہرے کو محسوس کیا ہے ؟\nیا شکارے میں کسی جھیل پہ جب رات بسر ہو\nاور پانی کے چھپاکوں میں بجا کر تی ہیں ٹلّیاں\nسُبکیاں لیتی ہواؤں کے کبھی بَین سُنے ہیں ؟\nچودھویں رات کے برفاب سے اس چاند کو جب\nڈھیر سے سائے پکڑنے کے لیے بھاگتے ہیں\nتم نے ساحل پہ کھڑے ہو کے کبھی\nماں کی ہناتی ہوئی کوکھ کو محسوس کیا ہے ؟\nجسم سو بار جلے تب بھی وہی مٹی ہے\nرُوح اِک بار جلے گی تو وہ کندن ہوگی\nرُوح دیکھی ہے ؟\n کبھی رُوح کو محسوس کیا ہے ؟

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com