کیا پاکستان بھارت جنگ ٹل گئی ہے؟ عمران زاہد

عمران زاہد جنگ ٹلی نہیں، بس طریقہ تبدیل ہوا ہے\nاس وقت بھارت پاکستان کے دریاؤں کا پانی روک چکا ہے۔ گزشتہ روز بھی بھارت کی جانب سے دریائے چناب میں معاہدے کے مطابق ساٹھ ہزار کیوسک روزانہ پانی کے بجائے صرف چھ ہزار کیوسک پانی چھوڑا گیا۔ اس سے پاکستانی فصلوں کپاس، گنا اور مکئی کے تباہ ہونے کا خدشہ ہے۔\n:\nآج بھارتی وزیرِاعظم مودی نے سندھ طاس معاہدے کا جائزہ لینے کے لیے اہم اجلاس بلا لیا ہے۔ آکاش وانی نے اس اجلاس کی خبر دیتے ہوئے بتایا کہ ورلڈ بینک، جو اس معاہدے کا ضامن ہے، کی رپورٹ کے مطابق اسی (۸۰) فیصد پانی پاکستان کو مل رہا ہے اور بھارت خسارے میں جا رہا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق مودی سندھ طاس معاہدے کو ختم کرنے کا اعلان بھی کر سکتے ہیں۔\n:\nدلچسپ بات یہ ہے کہ بھارتی دریا برہماپترا چین کے علاقے سے بھارت میں آتا ہے۔ بھارت کو خوف ہے کہ ان کے کسی ایڈونچر کے جواب میں چین ان کا پانی نہ روک لے۔\n:\nقائدِ اعظم رح نے فرمایا تھا کہ کشمیر پاکستان کی شاہ رگ ہے۔ ان کے اس فرمان کی اہمیت بھارت کی اس سازش سے دوچند ہو جاتی ہے۔ پاکستان آنے والے سارے دریا کشمیر میں سے نکلتے ہیں۔ بھارت نے ہماری شاہ رگ کو دبوچ رکھا ہے۔ وہ جب چاہے خون کے بہاؤ کو منقطع کر سکتا ہے۔\n:\nایسے میں پاکستان کو پانی کے مزید ذخیرے بنانے کی ضرورت ہے۔ کالاباغ ڈیم جیسے مفید ڈیم کی راہ میں جو سیاسی رکاوٹیں ہیں انہیں حکمت سے سلجھایا جانا چاہیے۔ یہ قوم کی زندگی و موت کا معاملہ ہے۔\n:\nعلاوہ ازیں، ہتھیار باندھ کے رکھیے کہ یہ جنگ کشمیر کے لیے ہو نہ ہو، پانی کے لیے ضرور لڑنی پڑ سکتی ہے۔

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com