دہن میں زباں تمہارے لئے , بدن میں ہے جاں تمہارے لئے ! - عصمت اسامہ

چشم تصور سے ماضی کے کچھ بابرکت لمحے یاد کر رہی ہوں, امی جی سے سنا کرتے تھے کہ نانو کہا کرتیں تھیں " مدینہ نہ دیکھا تو کچھ بھی نہ دیکھا !"اور پھر وہ وقت بھی آیا جب میں دونوں بچوں کا ہاتھ تھامے حرم نبوی کے سنہرے باب کے کھلنے کا انتظار کر رہی تھی ... ~ یہ کوچہ جاناں ہے ,آہستہ قدم رکھنا ... ہر جا پہ...