کینسر برائے فروخت - محمد اسمٰعیل بدایونی

یہ کیا عنوان ہے؟ سوشل میڈیا پر موجود میرے قارئین میرے اس آرٹیکل کو دیکھ کر بھڑک اٹھے۔ کیا بھلا کینسر جیسا موذی مرض بھی برائے فروخت ہو سکتا ہے؟ اور اگر ہو بھی جائے تو کیا کوئی خریدے گا؟ مضمون پڑھے بغیر لوگوں نے اپنے اپنے تاثرات کا اظہار کچھ یوں کیا۔ اچھا! اگر میں کہوں ہاں کینسر فروخت ہوتا ہے اور لوگ...