دے جا سخیا - ایم سرورصدیقی

ایک اندھا فقیر چوک میں ’’ دے جا سخیا راہ ِ خدا‘‘ کی گردان کرتے ہوئے بھیک مانگ رہاتھا ایک شخص نے ترس کھاکر اسے دس روپے کا نوٹ دیا جو اتفاق سے پھٹا ہوا تھا وہ شخص ابھی چند قدم ہی چلاہوگا کہ پیچھے سے اندھے فقیر نے آواز دی سخیا!پھٹا نوٹ ہی دیدیا۔ وہ شخص واپس پلٹا حیرانگی سے اس نے فقیرسے پوچھا تم تو...