دل بیدار فاروقی - ام محمد عبداللہ

وہ قوی تھے۔ بہادر اور جنگ جو تھے۔ علم والے تھے کہ اس وقت پڑھے لکھوں میں شمار تھا جب قبیلہ قریش کے صرف 17 لوگ پڑھنا لکھنا جانتے تھے۔ وہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے قتل پر تلے بیٹھے تھے مگر قرآن حکیم کی اثر آفرینی تھی کہ بارگاہ نبوت میں قبول اسلام کے لیے گردن جھکائے آئے تھے ۔ ان کا قبول اسلام تھا...