نظریے کی کلینیکل موت - ثمینہ رشید

بات نکلی ہارون الرشید صاحب کے کالم سے جو شاید نظرانداز ہو جاتی کہ کسی کا نام لیے بغیر مبہم سا ایک جملہ تھا، چند ایک کے علاوہ کسی کو معلوم ہی نہ ہوتا کہ کس کے بارے میں ہے، لیکن پھر وضاحت نے جن بوتل سے باہر نکال دیا۔ بات منہ سے نکلی اور کوٹھوں چڑھی کے مصداق ہر خاص و عام کا موضوع بن گئی۔ ایک عام انسان...

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */