ٹک ٹاک اور ہماری نوجوان نسل - سطوت اویس

وہ خوش شکل تھا۔ خوش اخلاق تھا زندگی سے بھرپور تھا۔ ہنستا ،کھیلتا، گاتا بجاتا، اپنی ہی دھن میں مگن۔ اسکی آنکھیں بولتی تھیں۔ انکی چمک سے اندازہ ہوتا تھا کہ کتنی ہی امنگیں تھیں ان میں۔ بہُت کچھ کرنا تھا اُسے۔ زندگی میں آ گے بڑھنا تھا۔۔ اور اس لمحے وہ ہر فکر سے آزاد صرف اپنی زندگی سے لطف اندوز ہونا...