دوسرے درجےکا ’شہری‘ تیسرے درجے کا ’انسان‘ - حامد کمال الدین

یہ چند گزارشات فقہائے اسلام کے بعض مقررات پر اصحابِ مورد کے اعتراضات کے سلسلہ میں ہیں، جن میں یہ ’’دار الاسلام‘‘ یا ’’جماعۃ المسلمین‘‘ کے اہل ذمہ کو ’دوسرے درجے کا شہری‘ کہہ کہہ کر چوٹیں فرما رہے ہیں۔ اس کا تھوڑا اندازہ مجھے محترم علی عمران صاحب کی پوسٹیں دیکھ کر ہوا، جن میں وہ فقہائے اسلام کے...