سہاگن - ڈاکٹر رضی الاسلام ندوی

شادی کی تقریب میں بہت ہمہ ہمی تھی. خواتین اور لڑکیاں بھی بڑی تعداد میں شریک تھیں. زرق برق لباس، بدن پر سجے زیورات، قہقہے اور خوش گپّیاں تقریب کی زینت بڑھا رہے تھے. ایک بزرگ خاتون کو مرکزی حیثیت حاصل تھی، اس لیے کہ بہت سی لڑکیاں انھیں گھیرے ہوئے تھیں اور ان کی باتیں بہت احترام سے سن رہی تھیں. میری...