سید منور حسن سے چند تلخ سوالات - سید عدنان کریمی

"نہیں! وہ میاں طفیل صاحب نہیں تھے بلکہ ہماری جماعت کے علاقائی ناظم تھے جو روزانہ مجھ سمیت دیگر کارکنوں کو رات کے اندھیرے میں قبرستان لے جاتے، وہاں فاتحہ خوانی کرتے، بعد ازاں کسی بوسیدہ قبر پر کھڑے ہوکر ہمیں متوجہ کرتے پھر دنیا کی بے ثباتی، آخرت کی فکر اور موت کی تیاری کی تلقین کرتے۔ ایک روز مجھے...