بادل سےجھانکتی چاندنی - اسماء اعجاز شاه

یہی کوئی دو ہفتےقبل ، ایک خوشگوار رات ہم دونوں ماں بیٹی کچن سے فارغ ہونے کے بعد صوفے پر نیم دراز ..... تندور سے روٹیاں آنے کی منتظر...... آپس میں محوے گفتگو تھیں . معاً دوسرےکمرے کا دروازہ بجا! میں نے عروبہ سےکہا دیکھو تو زرا....... اور دل میں سوچا کہ شمریز تو ہونہیں سکتا, اتنی خاموش آمد اور اتنی...