بالائی چترال سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر اسماعیل ولی کی ایم-اے سے لے کر پی ایچ ڈی تک تمام ڈگریاں انگریزی زبان و ادب میں ہے۔ ان کا تحقیقی مقالہ ولیم شیکسپیئر کے ایک طربیے پر ہے جبکہ ایم فل مقالہ میتھیو آرنلڈ کی شاعری پر تھا۔ سرکاری ملازمت سے قبل از وقت ریٹائرمنٹ لے کر انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ سائنسز، پشاور میں درس و تدریس کر رہے ہیں۔ اسلام، فلسفہ، مغربی ثقافت، نفسیات اور تصوف کا مطالعہ رکھتے ہیں۔

زندگی پر کس کا حق ہے؟ - محمد اسماعیل ولی

ان دنوں "میرا جسم، میری مرضی" کی اشتہار بازی ہو رہی ہے۔ اگرچہ اس کا اشارہ زنا بالرضا کے لیے قانون سازی کا راستہ ہموار کرنا ہے لیکن اس کے اور بھی گہرے مضمرات ہیں۔ اس نعرے کی جڑیں انسان پرستی کے فلسفہ حیات سے جڑی ہوئی ہیں۔ جو نطشے کے "وفات خداوندی" کے اعلان پر منتج ہوا۔ انسان پرستی کے فلسفے کا نچوڑ...